چپ –

0
66

کلی سے یوں کہا باد سحر نے
تجھے پالا ہے آغوش قمر نے
ستارے رات بھر گاتے رہے ہیں
تجھے گیتوں سے بہلاتے رہے ہیں
گھٹا تیرے لئے پیمانہ بر کف
تو خود اک ساقی میخانہ بر کف
بہاریں جس پہ نازاں ہیں وہ تو ہے
گلستاں جس سے خنداں ہیں وہ تو ہے

کلی نے جب سنی تعریف اپنی
تو وہ باد سحر گاہی سے بولی
ہے بالکل ٹھیک جو تو کہہ رہی ہے
لبوں سے تیرے گنگا بہ رہی ہے
چمن کی زندگی ہوں، جان ہوں میں
چمن والوں کا دین ایمان ہوں میں
کلی یہ کہتے کہتے ہو گئی چپ
نسیم صبح نے بھی سادھ لی چپ

Rate this post
Previous articleجوانی
Next articleخبر لی آسماں نے پھر زمیں کی

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here